طریقت

طریقت کے لغوی معنی تو راستے کے ہیں مگر تصوف کی اصطلاح میں طریقت اُس عہد کو کہتے ہیں جو باطنی اصلاح کیلئے کسی صاحبِ حقیقت کے ہاتھ میں ہاتھ دے کر کیا جائے  یہ ایک روایتی اسلوب ہے جو ہمارے ہاں رائج چار مختلف صوفی سلاسل کی بنیاد پر قائم ہے یعنی قادریہ، چشتیہ، نقشبندیہ اور سہروردیہ اسکے علاوہ بھی کئی ایک سلاسل ہیں مگر معروف یہی چار ہیں شریعت جہاں انسان کو جسمانی ضابطہ فراہم کرتی ہے تو وہاں طریقت سے انسان روحانی پاکیزگی حاصل کرتا ہے گویا طریقت روحانی ارتقاء کا اولین مقام ہے روح کی تہذیب اور ارتقاء اس لئے ضروری ہے کہ جسم کا سارا دارومدار روح پر قائم ہے چنانچہ روح کی تخریب و انتشار دراصل جسم کی تخریب و انتشار ہے اس لئے روح کی تہذیب بنیادی حیثیت کی حامل ہے طریقت نہ صرف روح کی تہذیب سکھاتی ہے بلکہ انسانی فکر کو ارتقائی مراحل سے گزرنے میں بھی مدد دیتی ہے بشرطیکہ مرشد صاحبِ حقیقت ہو اگر مرشد صاحبِ شریعت ہے اوراُس نے خود باطنی منازل طے نہیں کئے تو وہ اپنے سے جڑے لوگوں کو بھی وہیں لا کھڑا کرے گا جہاں یہ خود موجود ہو گا اس لئے کسی کا لڑ پکڑتے وقت انتہائی ذہانت اور تدبر سے کام لینا چاہئے.

Designed and Developed by Solutionica